khwaja ka darbarMUSLIM SALEEM

HO SHAH-E-WAQT KOI BHI MAGAR HAIN YE SARDAR

YAHAN SAY CHALTA HAI HINDOSTAN KA KAROBAR

JAHAN JHUKATA HA SAR HAR KOI YE WO DAR HAI

HAREEM-E-FAIZ HAI KHWAJA MOEEN KA DARBAR

Khwaja Haleem – great but lesser known Muslim leader of UP

 Khwaja Haleem – great but lesser known Muslim leader of UP

By Muslim Saleem

He believes in service to the community without making a bid to take credit and seek popularity. He has been making great efforts for welfare and upliftment of community people overtly and covertly. Apart from political arena, he has also opened a number of educational institutions for community’s educational, social and economic empowerment.

khwaja haleem compact

This great but lesser known Muslim leader of UP is none other Khwaja Haleem. He was born to Mr Khwaja M. Masood and Mohtarma Ayesha Khatoon at Aligarh on August 28, 1944. Leadership skills of Khwaja Haleem came to the fore during studies at Aligarh Muslim University, Aligarh where he rose to prestigious post of Senior Proctorly Monitor. After completing MSc Statistics, Khwaja Haleem joined mainstream politics and was elected as Member of Uttar Pradesh Assembly in 1980. Before that, he took part in many political movements and was imprisoned in 1978 and 1979 in jails of Aligarh and Jhansi. In the meantime, he held posts of President of District Congress Committee, General Secretary of State Lok Dal and National Secretary of Samajwadi Party.
Khwaja Haleem became Chairman of state Minorities Commission in 1989-90, Member and later Chairman of Sunni Waqf Board, Uttar Pradesh, Member of Uttar Pradesh Haj Committees and Member or Aligarh Muslim University Court.
On May 6, 2000, Khwaja Haleem was elected as Member of Legislative Council of Uttar Pradesh from Vidhan Sabha constituency on the ticket of Samajwadi Party. This tenure ended after 6 years on May 8, 2006.
In year 2000-2001, Khwaja Haleem was nominated as member of Finance and Administrative Delay Committee of Vidhan Parishad, Member of Legislative Empowerment Committee, Member of Medical and Public Health Standing Committee and Member of Appeal Committee of Uttar Pradesh Vidhan Parishad.
In year 2003-04, Khwaja Haleem was nominated as Member of Assurance Committee of Uttar Pradesh Vidhan Parishad.
In year 2004-05, he was nominated as Chairman of Revision Committee of Uttar Pradesh Vidhan Parishad,
On September 8, 2005, Khwaja Haleem was inducted as Cabinet Minister for Industrial Development in the ministry of Chief Minister Shri Mulayam Singh Yadav.
AT PRESENT, KHAWAJA HALEEM IS ADVISOR TO UTTAR PRADESH GOVERNMENT’S TOURISM DEPARTMENT. HE HAS UNDERTAKEN VARIOUS IMPORTANT DECISIONS DURING THIS TENURE. ONE OF HIS MAJOR ACHIEVEMENTS IS THAT HE HAS BROUGHT ALIGAR ON WORLD TOURISM MAP BY GETTING SHEKHA LAKE DECLARED ASAS BIRD SANCTUARY.
HE IS FOUNDER-CHAIRMAN OF ALIGHAR TEACHERS TRAINING COLLEGE (B ED. BTC, BA, B.COM). 2- KHWAJA INTERNATIONAL COLLEGE AND 3. MADARSA AL-EHRAR.
Khwaja Haleem has been a member of UP Haj Committee for the last 20 years. dhan Parishad) and also its Deputy Chairman. He is also a member of Samajwadi Party’s National Executive. He has undertaken visits to Russie, Uzbekistan, Czechoslovakia and Saudi Arabia. He has penchant for studies and sports. Address: Khowaja Haleem, Bargad House, Civil Lines, Aligarh.
Khowaja Haleem is a highly educated politician of Uttar Pradesh. Despite being a politician, he has an impeccable mage, kept corruption at a bay and come out clean while essaying various responsibilities including those of Minister in Uttar Pradesh. May Allah give him a long and healthy life to continue community welfare. (Muslim Saleem, after return from Aligarh at Bhopal on February 22, 2016).

Baaz aa jao: Muslim Saleem

uda dete hainMUSLIM SALEEM
UAA DETE HAIN JO SCHOOL KE MASOOM BACHCHON KO
FANAA KAR DETE HAIN TAYYARAY JIN KE ASPATALON KO
JINHON NE MAAR DALA HAI KARORON BAY GUNAAHO KO
BILAD E MAGHRIBI AB RO RAHAY HAIN APNI JAANUN KO
BATAYEN MASHRIQ E WASTAA MEIN UN KA KAAM HI KYA HAI
BANAYA HAI WAHAN KA MUNTAZIM AUR MUHTASIB KIS NE
YEH BEHTAR HAI KE BAZ AAJAYEN BAYJA DAKHAL DAY NE SE
YEH SAB SHAITAN KE CHELE YEH ISRAEL KE CHAMCHAY

محمدعباد خان شمس بھوپالی ایک درخشاں ستارہ جو ڈوب گیا:مسلم سلیم

تعزیتی اجلاس میں نوجوان شاعر کو خراجِ عقدت پیش کیا گیاIBAD SOLO 2
بھوپال (26 اکتوبر2015) بھوپال اردو ادب کی زرخیز سرزمین ہے۔ اس نے شعری بھوپالی، کیف بھوپالی، سراج میر خاں سحر جیسے شعراءسے فیض حاصل کیا ہے۔ گذشتہ تین دہائیوں سے حکومت کی عدم سر پرستی اور اور خود اردو داں طبقہ کی بے رغبتی کے باعث نئے اردو شعراءو ادباءکا بھوپال میں ظہور نہیں ہو رہا تھا۔ جو شاذونادر نئے چہرے دکھائی دیتے تھے وہ بھی اتر پردیش اور بہار سے یہاں بہ سلسلہ ¿ ملازمت آئے ہوئے ہیں۔ ان نئے چہروں میں سب سے تابناک ستارہ محمدعباد خان شمس بھوپالی تھا جو  25اکتوبر2015 کو دل کا دورہ پڑنے سے اچانک غروب ہوگےا۔ (اناّ للہ و اناّ الیہ راجعون) ۔
ہم سخن ادبی تنظیم کی جانب سے ایک تعزیتی اجلاس میںبھوپال کے اس نوجوان شاعر کو خراجِ عقدت پیش کیا گےا۔ شاعر اور صحافی جناب مسلم سلیم نے بتایا کہ وہ گذشتہ ایک سال سے انکے حلقہ بگوش تھے۔انھوں نے بتایا یہ کہ اس سے پہلے انھوں نے کبھی شعر نہیں کہے تھے لیکن مجھ سے اور میری شاعری سے متاثر ہو کر انھوں نے شعر کہنا شروع کردئے تھے۔ کافی دنوں بعد انھوں نے اےک غزل بغرضِ اصلاح ارسال کی۔ ابتدائی مراحل کے اشعار تھے۔لیکن فنی نکات سے قطع نظر مجھے اےک با ت بہت نماےاں نظر آئی کہ یہ اک سوچنے والے شخص کی شاعری ہے جس کا مستقبل تابناک ہوگا۔ گذشتہ ۶ ماہ کے دوران وہ غزلیں بھیجتے رہے اور بعد میں خود غریب خانہ پر آکر اصلاح لیتے رہے۔ ہر بار ان میں بے حد امپروومنٹ دیکھنے کو ملا۔ اور اب تو یہ عالم ہو گیا تھا دو غزلے بھی بڑی صفائی کے ساتھ کہنے لگے تھے۔
مشہور شاعر جناب ثروت زیدی نے بتایاکہ محمد عبادخاں شمس بھوپا لی اچھا شاعر ہونے کا ساتھ ساتھ بے حد مخلص اور ملنسار بھی تھے۔ وہ بھوپال کی ادبی نشستوں کی روحِ رواں بنتے جا رہے تھے۔ ان کے انتقال سے اردو ادب کا نقصانِ عظیم ہوا ہے ۔
ہم سخن کے صدر جناب سلیم قریشی نے کہ کہا کہ محمد عبادخاں شمس بھوپالی مکمل شاعر تھے اور فیس بک پر مشہور اور مقبول ہو رہے تھا۔لیکن ستارہ چڑھنے سے پہلے ہی ڈوب گےاجس سے تما م دنیا اس سے ضیا ءبار ہونے والی تھی۔
تنظیم کے سکریٹری جناب عبدالاحد فرحان نے بتاےا کہ محمدعباد خان شمس بھوپالی جناب عارف محمد خان صاحب اورمحترمہ لُبنیٰ بیگم کے صاحبزادہ تھے جو تقریباً ۵۲ برس قبال ۷ جون کو بھوپال میں تولد ہوئے تھے۔ آپ نے بے نظیرکالج بھوپال سے تعلیم حاصل کی اور ایم ۔پی ۔ اسٹیٹ الیکشن اتھارٹی میں کمپیوٹر آپریٹر کے عہدے پر فائز تھے۔
اس موقعہ پر تنظیم کے ارکان جناب عطا ءاللہ فیضان، سمیر فیروزی، کاشف خان، توصیف خان، زیبا اکرم، سنجے گائکواڑ اور ادب نواز حضرات موجود تھے۔ نشست میں ۲ منٹ سکوت اختیار کرکے محمدعباد خان شمس بھوپالی کو خراجِ عقیدت پیش کیا گیا اور دعائے مغفرت کی گئی

Allama Iqbal’s son Justice Javed Iqbal dies, Barqi Azmi pays poetic tributes

شاعرِ مشرق علامہ اقبال کے صاحبزادے جسٹس جاوید اقبال کے سانحۂ ارتحال پر منظوم تاثرات

javed iqbal son of allamaاحمد علی برقی اعظمی

نہیں رہے جاوید اقبال

ذہن میں ہے اک حُزن و مَلال

ایسے باپ کی تھے اولاد

جیسا سخنور اب ہے محال

Continue reading

Sarwat Zaidi good poet and Urdu lover: Muslim Saleem

مشہور شاعر ثروت زیدی بھوپالی کو شاندار استقبالیہ
بھوپال : نامور شاعر جناب ثروت زیدی بھوپالی کو ہم سخن ویلفئیر سوسائٹی کی جانب سے ۰۳ اپریل ۵۱۰۲ کو گاندھی بھون میں شاندار استقبالیہ دیا گےا جس میں جناب دیوی سرن مہانِ خصوصی تھے جبکہ صدارت مشہور شاعرجناب مسلم سلیم نے فرمائی ۔ مہمانِ ذی وقار پروفیسرحیدر عباس رضوی تھے۔اس موقعہ پر ہاکی اولمپین سید جلال الدین اور محترم اعجاز محمد خان نظامت کے فرائض ڈاکٹر اعظم نے انجام دئے ۔
صدارتی خطبہ میں جناب مسلم سلیم نے کہا کہ اردو ایک زندہ وپائندہ زبان ہے ۔آزادی کے بعد اسکو مٹانے کی مسلسل کوششیں کی گئی ہیں جو اب بھی جاری ہیں۔لیکن اردو مٹنے کے بجائے اور بھی پروان چڑھتی جا رہی ہے ۔ ایسا اس لئے ہے کہ ہندوستان میں ثروت زیدی جیسے اردو کے جاں نثار موجود ہیں جو دامے، درمے، قدمے،سخنے اس کی بقاءاور ارتقا ءکے لےے کوشاں ہیں ۔ان کی خدمات کا جشن اسی کڑی میں ایک اہم قدم ہے۔ اس کے لےے میں ہم سخن ویلفئیر سوسائٹی کے باعزم نوجوان محبانِ اردو کومبارکباد پیش کرتا ہوں۔ آج ثروت زیدی صاحب کے جشن کے موقعہ پر ان کے تازہ ترین مجموعہ ”منزلوں کے پار“ کا اجراءبھی کےا گےا ہے
مہمانِ خصوصی جناب دیوی سرن نے کہا بھوپال کی ہاکی اور شاعری کے تعلق سے پرانی ےادوں کو تازہ کرتے ہوئے ثروت زیدی کے لکھے ہوئے ہاکی کا ترانہ کو سراہا۔
مہمانِ ذی وقار پروفیسر حیدر عباس رضوی نے کہا کہ ثروت زیدی شاعرِ فطرت ہیں۔ وہ روزمرہ کے استعمال کی سادہ زبان استعمال کرتے ہیںجن میں بھوپال کے تہذیب و تمدن کی عکاسی ہوتی ہے۔
شعری نشست
استقبالیہ کے بعد شعری نشست منعقد ہوئی جسمیں حضرات مسلم سلیم، ثروت زیدی، ڈاکٹر اعظم، مظفر طالب، ملک نوےد، سلیم ثروت، غوثیہ خان ثمین ،محمد عباد خان ، پرویز اختر، ڈاکٹر احسان اعظمی، محترمہ اورینہ ادا، رمیش نند اورمحمد عباد خاں شمس بھوپالی نے اپنے کلام سے سامعین کو نوازا۔نظامت اپنے خوبصورت انداز میں ڈاکٹر اعظم نے فرمائی۔ اس موقعہ پرشہر کی مقتدر ہستیاں اور شائقین بھاری تعداد میں موجود تھے۔

muslim saleem reciting  3 muslim saleem reciting  1Muslim Saleem reciting his kalam and delivering presidential address

From left) Olypion hockey great Syed Jalaluddin, Prof. Haidar Abbas Rizvi, Muslim Saleem, Sarwat Zaidi Bhopali, Janab Devi Saran, Janab Aijaz Khan

From left) Olympion hockey great Syed Jalaluddin, Prof. Haidar Abbas Rizvi, Muslim Saleem, Sarwat Zaidi Bhopali, Janab Devi Saran, Janab Aijaz Mohammad Khan

Humsukhan's president Ataullah Faizan presenting memento to Janab Sarawat Zaidi

Humsukhan’s president Ataullah Faizan presenting memento to Janab Sarawat Zaidi

Dr Azam, Muslim Saleem, Sarwat Zaidi, Devi Saran and Aijaz Mohammad Khan releasing Sarwat Zaidi's book Manzilon Ke Paar

Dr Azam, Muslim Saleem, Sarwat Zaidi, Devi Saran and Aijaz Mohammad Khan releasing Sarwat Zaidi’s book Manzilon Ke Paar

Muslim Saleem being honoured

Muslim Saleem being honoured

Patrons and members of Humsukhan with Muslim Saleem and Sarwat Zaidi

Patrons and members of Humsukhan with Muslim Saleem and Sarwat Zaidi

Members of Humsukhan Welfare Society with Muslim Saleem and Sarwat Zaidi

Members of Humsukhan Welfare Society with Muslim Saleem and Sarwat Zaidi

Janab Devi Saran speaking

Janab Devi Saran speaking

Sarwat Zaidi Presenting his famous poem on Bhopal Hocky set in frame to Muslim Saleem

Sarwat Zaidi Presenting his famous poem on Bhopal Hocky set in frame to Muslim Saleem

Prof. Haidar Abbas Rizvi speaking

Prof. Haidar Abbas Rizvi speaking

afghani

Ali AfghaniDr Azam reciting

Dr AzamDr Ehsan Azmi

Dr. EhsanAzmiGhousiya

Ghosiya Khan Sabeenibad 2

Ibad Mohammad Khan Shams Bhopalimalk navedMalik Naved

audinece 6 Aaudience1audience 6audience 7audience ladiesaudience last row