khwaja ka darbarMUSLIM SALEEM

HO SHAH-E-WAQT KOI BHI MAGAR HAIN YE SARDAR

YAHAN SAY CHALTA HAI HINDOSTAN KA KAROBAR

JAHAN JHUKATA HA SAR HAR KOI YE WO DAR HAI

HAREEM-E-FAIZ HAI KHWAJA MOEEN KA DARBAR

Advertisements

Baaz aa jao: Muslim Saleem

uda dete hainMUSLIM SALEEM
UAA DETE HAIN JO SCHOOL KE MASOOM BACHCHON KO
FANAA KAR DETE HAIN TAYYARAY JIN KE ASPATALON KO
JINHON NE MAAR DALA HAI KARORON BAY GUNAAHO KO
BILAD E MAGHRIBI AB RO RAHAY HAIN APNI JAANUN KO
BATAYEN MASHRIQ E WASTAA MEIN UN KA KAAM HI KYA HAI
BANAYA HAI WAHAN KA MUNTAZIM AUR MUHTASIB KIS NE
YEH BEHTAR HAI KE BAZ AAJAYEN BAYJA DAKHAL DAY NE SE
YEH SAB SHAITAN KE CHELE YEH ISRAEL KE CHAMCHAY

Sarwat Zaidi good poet and Urdu lover: Muslim Saleem

مشہور شاعر ثروت زیدی بھوپالی کو شاندار استقبالیہ
بھوپال : نامور شاعر جناب ثروت زیدی بھوپالی کو ہم سخن ویلفئیر سوسائٹی کی جانب سے ۰۳ اپریل ۵۱۰۲ کو گاندھی بھون میں شاندار استقبالیہ دیا گےا جس میں جناب دیوی سرن مہانِ خصوصی تھے جبکہ صدارت مشہور شاعرجناب مسلم سلیم نے فرمائی ۔ مہمانِ ذی وقار پروفیسرحیدر عباس رضوی تھے۔اس موقعہ پر ہاکی اولمپین سید جلال الدین اور محترم اعجاز محمد خان نظامت کے فرائض ڈاکٹر اعظم نے انجام دئے ۔
صدارتی خطبہ میں جناب مسلم سلیم نے کہا کہ اردو ایک زندہ وپائندہ زبان ہے ۔آزادی کے بعد اسکو مٹانے کی مسلسل کوششیں کی گئی ہیں جو اب بھی جاری ہیں۔لیکن اردو مٹنے کے بجائے اور بھی پروان چڑھتی جا رہی ہے ۔ ایسا اس لئے ہے کہ ہندوستان میں ثروت زیدی جیسے اردو کے جاں نثار موجود ہیں جو دامے، درمے، قدمے،سخنے اس کی بقاءاور ارتقا ءکے لےے کوشاں ہیں ۔ان کی خدمات کا جشن اسی کڑی میں ایک اہم قدم ہے۔ اس کے لےے میں ہم سخن ویلفئیر سوسائٹی کے باعزم نوجوان محبانِ اردو کومبارکباد پیش کرتا ہوں۔ آج ثروت زیدی صاحب کے جشن کے موقعہ پر ان کے تازہ ترین مجموعہ ”منزلوں کے پار“ کا اجراءبھی کےا گےا ہے
مہمانِ خصوصی جناب دیوی سرن نے کہا بھوپال کی ہاکی اور شاعری کے تعلق سے پرانی ےادوں کو تازہ کرتے ہوئے ثروت زیدی کے لکھے ہوئے ہاکی کا ترانہ کو سراہا۔
مہمانِ ذی وقار پروفیسر حیدر عباس رضوی نے کہا کہ ثروت زیدی شاعرِ فطرت ہیں۔ وہ روزمرہ کے استعمال کی سادہ زبان استعمال کرتے ہیںجن میں بھوپال کے تہذیب و تمدن کی عکاسی ہوتی ہے۔
شعری نشست
استقبالیہ کے بعد شعری نشست منعقد ہوئی جسمیں حضرات مسلم سلیم، ثروت زیدی، ڈاکٹر اعظم، مظفر طالب، ملک نوےد، سلیم ثروت، غوثیہ خان ثمین ،محمد عباد خان ، پرویز اختر، ڈاکٹر احسان اعظمی، محترمہ اورینہ ادا، رمیش نند اورمحمد عباد خاں شمس بھوپالی نے اپنے کلام سے سامعین کو نوازا۔نظامت اپنے خوبصورت انداز میں ڈاکٹر اعظم نے فرمائی۔ اس موقعہ پرشہر کی مقتدر ہستیاں اور شائقین بھاری تعداد میں موجود تھے۔

muslim saleem reciting  3 muslim saleem reciting  1Muslim Saleem reciting his kalam and delivering presidential address

From left) Olypion hockey great Syed Jalaluddin, Prof. Haidar Abbas Rizvi, Muslim Saleem, Sarwat Zaidi Bhopali, Janab Devi Saran, Janab Aijaz Khan

From left) Olympion hockey great Syed Jalaluddin, Prof. Haidar Abbas Rizvi, Muslim Saleem, Sarwat Zaidi Bhopali, Janab Devi Saran, Janab Aijaz Mohammad Khan

Humsukhan's president Ataullah Faizan presenting memento to Janab Sarawat Zaidi

Humsukhan’s president Ataullah Faizan presenting memento to Janab Sarawat Zaidi

Dr Azam, Muslim Saleem, Sarwat Zaidi, Devi Saran and Aijaz Mohammad Khan releasing Sarwat Zaidi's book Manzilon Ke Paar

Dr Azam, Muslim Saleem, Sarwat Zaidi, Devi Saran and Aijaz Mohammad Khan releasing Sarwat Zaidi’s book Manzilon Ke Paar

Muslim Saleem being honoured

Muslim Saleem being honoured

Patrons and members of Humsukhan with Muslim Saleem and Sarwat Zaidi

Patrons and members of Humsukhan with Muslim Saleem and Sarwat Zaidi

Members of Humsukhan Welfare Society with Muslim Saleem and Sarwat Zaidi

Members of Humsukhan Welfare Society with Muslim Saleem and Sarwat Zaidi

Janab Devi Saran speaking

Janab Devi Saran speaking

Sarwat Zaidi Presenting his famous poem on Bhopal Hocky set in frame to Muslim Saleem

Sarwat Zaidi Presenting his famous poem on Bhopal Hocky set in frame to Muslim Saleem

Prof. Haidar Abbas Rizvi speaking

Prof. Haidar Abbas Rizvi speaking

afghani

Ali AfghaniDr Azam reciting

Dr AzamDr Ehsan Azmi

Dr. EhsanAzmiGhousiya

Ghosiya Khan Sabeenibad 2

Ibad Mohammad Khan Shams Bhopalimalk navedMalik Naved

audinece 6 Aaudience1audience 6audience 7audience ladiesaudience last row

Muslim Saleem – ghazal

ghazal June 10, 2015WOH KHUSH HUA THA MERI TARAF TEER CHHORE KAR
AB PHIR RAHA HAI IZZAT O TOUQEER CHHORE KAR
ACHCHA HAI HABS-E ZAAT HI DAAM JAHAN SE
JATAY NAHEEN HAIN IS LE Y ZANJEER CHHORE KAR
HO DOOBNA HI JIN KA MUQADDAR WOH BADNASEEB
TINKE KO THAAM LETAY HAIN SHEHTEER CHHORE KAR
HERAT HO KE A JO QIL’A-E- UMMAT HAI MUNHADIM
TAKHREEB MEIN LAGEY RAHAY TAAMEER CHHORE KAR
PESHA MULAZMAT HAI, GHULAMI NA USKO JAAN
DAFTAR SE US KE AGAY GAYE TEHREER CHHORE KAR